سوموار, 02 مارچ 2020 07:40




جاں کی بازی ہے گرچہ مات رہے
آپ کا ہاتھ میرے ہاتھ رہے

 

میں نے کب چاہا آئے اور جائے
درد بن جائے میرے ساتھ رہے

سب زمان و مکاں لپٹ جائیں
تو بسے، دل کی کائنات رہے

چھوڑ جائیں پرائے اور اپنے
آپ کا حسنِ التفات رہے

چاند چہرہ رہے نگاہوں میں
اور سماعت میں اس کی بات رہے


* * * * * 

Read 355 times