کلامی مباحث

کلامی مباحث (2)



تلخیص:
اللہ رب العزت نے حضرت محمد مصطفیٰ ؐکو اپنا محبوب قرار دیا ہے اور انسانوں کے اعمال کی قبولیت رسالت آخرالزماں ؐکی اطاعت و محبت سے مشروط قرار دی ہے۔ لہٰذاکسی بھی مسلمان کو رسول اکرم ؐ سے کسی بھی شکل میں نفرت کا اظہا کرنے کا حق حاصل نہیں ہے ۔ امت مسلمہ کا اس بات پر اتفاق ہے کہ شان رسالت میں عمداً توہین کرنے والا انسان کافر اور مرتد ہے۔




 
مفتی امجد عباس

سنی و شیعہ مصادر میں اِس مضمون کی ایک روایت وارد ہوئی ہے “لا تنزلوا النساء بالغرف ولا تعلموهن الكتابة” کہ عورتوں کو بالا خانوں میں نہ بیٹھنے دیا کرو اور اُنھیں لکھنا نہ سکھاؤ۔ اِن جملوں کے علاوہ بعض مقامات پر ساتھ یہ بھی ہے کہ اُنھیں “کڑھائی/ کپڑا بننا” سکھاؤ، سورہ نور کی تعلیم دو، سورہ یوسف نہ پڑھاؤ۔ شیعہ کتب میں یہ روایت معمولی سی تبدیلی کے ساتھ نبی کریم اور امام علی سے الکافی اور تہذیب الاحکام میں مذکور ہے جبکہ سُنی کتب میں یہ روایت حضرت عائشہ کی زبانی، نبی کریم سے معجم الاوسط للطبرانی، مستدرکِ حاکم۔۔۔

تازہ مقالے