عصر حاضر میں اسلام کی متحرک اور قابل عمل تصویر اُس وقت تک پیش نہیں کی جاسکتی اور اسے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں بنایا جا سکتا جب تک زمان و مکان کے بدلتے ہوئے تقاضوں کی روشنی میں قرآن و سنت کے فہم کی سمت متعین نہ کی جائے۔ اس مقالے میں ان بنیادوں اور مختلف پہلوئوں کی طرف اشارہ کیا گیا ہے جو براہ راست قرآن و سنت کے فہم پر اثر انداز ہوتے ہیں لیکن ان کے اثر انداز ہونے کی نوعیت پر زبردست اختلا ف ہے،



عصر حاضر میں اسلام کی متحرک اور قابل عمل تصویر اُس وقت تک پیش نہیں کی جاسکتی اور اسے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہیں بنایا جا سکتا جب تک زمان و مکان کے بدلتے ہوئے تقاضوں کی روشنی میں قرآن و سنت کے فہم کی سمت متعین نہ کی جائے۔ اس مقالے میں ان بنیادوں اور مختلف پہلوئوں کی طرف اشارہ کیا گیا ہے جو براہ راست قرآن و سنت کے فہم پر اثر انداز ہوتے ہیں لیکن ان کے اثر انداز ہونے کی نوعیت پر زبردست اختلا ف ہے،

تازہ مقالے