تاریخ

تاریخ (2)



’’تاریخ میں کھو نہیں جانا چاہیے تاریخ میں جا کر بیٹھ نہیںجانا چاہیے تاریخ سے سبق حاصل کرنا چاہیے‘‘ یہ سادہ مگر انتہائی گہرے معانی کے حامل جملے ایک سابق صدر پاکستان جنرل پرویز مشرف کے ہیں۔ ایک پیشہ ور فوجی کی زبان سے ایسی گہری باتیں اخبارات میںپڑھ کر مجھے واقعاً حیرت ہوئی۔
تاریخ میں کھو جانے کا معاملہ بڑا اہم اور بہت سنگین ہے۔ انسانوں کے ارتقا میں حائل یہ ایک بہت بڑا پتھر ہے۔ جسے سنگ میل ہونا چاہیے وہ سنگ راہ بن جاتا ہے مجھے اپنا ہی ایک شعر یاد آگیا ہے:



علاقہ اقبال اور دیگر کئی ایک اہل نظر نے تاریخ کو حواس و عقل کے متوازی ایک سرچشمہ علم قرار دیا ہے۔ یہ امر کہاں تک درست ہے اور فلاسفہ کے نزدیک اس کی کیا توجیہ ہے‘ اس سے صرف نظر اس میں شک نہیں کہ تاریخ کا مطالعہ انسانی فکر و نظر اور  مجموعی طور پر انسانی سماج کے ارتقاء میں ایک بہت اہم کردار ادا کرتا ہے۔ خاص طور پر جب تاریخ کو انسان کی اجتماعی کارکردگی اور اجتماعی بصیرت کے لیے بطور آئینہ دیکھا جائے۔

تازہ مقالے