تراجم

علمی و تحقیقاتی ادارہ البصیرہ ہزاروںصفحات پرمشتمل مختلف علمی و تحقیقی موضوعات کو ترجمہ کرچکا ہے اور ادارہ کے شعبہ تراجم کے فاضل مترجمین مسلسل علمی و ابی موضوعات کو اردو زبان کے قالب میں ڈھالنے میں مصروف کار   رہتے ہیں۔ ڈیل میں دنیا کی مختلف زبانوں کے علمی و ادبی مقالات اور کتب کے تراجم کی ایک جھلک البصیرہ کی ویب سائٹ سے استفادہ کرنے والوں کے لیے پیش خدمت ہیں۔

علاوہ ازیں جہاں مختلف موضوعات کے عالمی زبانوں میں تراجم کے علاوہ مترجمین کی تربیت کا اہتمام بھی ہے

کہتی ہے تجھ کو خلق خدا غائبانہ کیا

مترجم سید علی رضوی

امام خمینی جن کی برسی 4 جون 2009 کو منائی جارہی ہے ، نے دنیا کے طول و عرض میں اہل دانش و سیاست کو متاثر کیا ۔ انھیں خراج تحسین پیش کئے جانے کا سلسلہ ان کی زندگی میں شروع ہوا اور آج تک جاری ہے ۔ آئے چند ایک اظہارات پر ایک نظر ڈالتے ہیں:

  • مشاہدات: 1152

حضرت فاطمہ زہرا (ع) اور اکابر اسلام

انتخاب وترجمہ:ثاقب اکبر

ذیل میں چنداکابر اسلام کی کتب میں سے منتخب روایات و احادیث اوراقوال پیش کیے جارہے ہیں جن سے حضرت فاطمہ زہرا (ع) کے مقام و منزلت کا کچھ اندازہ ہوتا ہے۔

امام احمد ابن حنبل

اہلِ سنت کے چار مشہور ترین اہلِ مذاہب میں سے ایک اور حدیث کے بہت بڑے امام احمد ابن حنبل نے اپنی مسند کی تیسری جلد میں اپنی خاص اسناد کے ذریعے سے خادم رسول مالک بن انس سے روایت کی ہے: ”رسول اسلام چھ ماہ تک ہر روز نماز صبح کے لئے جاتے ہوئے حضرت فاطمہ کے گھر کے پاس سے گزرتے اور فرماتے: نماز! نماز! اے اہلِ بیت !یہ کہہ کر آپ پھر اس آیت کی تلاوت کرتے: ”اِنَمَا یُرِید اللہ لِیُذھِبَ عِنکُم اَلّرِجسِ اَھل البَیت وَ یطھر کُم تَطھِیراً “

(اے اہلبیت! اللہ کا تو بس یہی ارادہ ہے کہ تمھیں ہر ناپاکی سے دور رکھے اور تمھیں خوب پاک و پاکیزہ رکھے۔)

  • مشاہدات: 2439

قرآن فریاد کناں ہے

قرآن

آیت اللہ محسن قرآئتی 

ترجمہ و حواشی: ثاقب اکبر

آیت اللہ محسن قرآئتی اپنے خاص اور جدید طرز تدریس کی وجہ سے نہایت مقبول ہیں۔ایران میں انقلاب اسلامی کی کامیابی کے بعد انھوں نے تعلیم بالغاں کے شعبے میں اعجاز آمیز کام کرکے دکھایا۔سرکاری اداروں میں نماز باجماعت کے قیام کی تحریک چلائی ۔قرآن حکیم کے حوالے سے ان کے دروس ایسے دل نشین پیرائے کے حامل ہوتے ہیں کہ مطالب دل میں اُترتے چلے جاتے ہیں۔انھوں نے ایران کے طول و عرض میں اسلامی تعلیمات کوعام کرنے کے لیے بے پناہ سفر کیے ہیں۔ کچھ عرصہ پہلے ان کی تفسیر نور شائع ہوناشروع ہوئی تواُس نے مقبولیت وپذیرائی کے ریکارڈ توڑدیے۔قبل ازیں وہ تفسیر نمونہ کے محققین کی فہرست میں بھی شامل رہے ہیں۔

  • مشاہدات: 4100

تہذیبوں کے مابین مکالمہ

 محسن اراکی

ترجمہ: ثاقب اکبر

” تہذیبوں کے مابین مکالمہ“ فارسی عبارت ”گفت و گوی تمدن ھا“ کا مترادف ہے۔ ”مکالمہ“ اردو میں انگریزی لفظ ”Dialogue“ کا ترجمہ ہے۔ مکالمہ اور Dialogue دونوں میں کہنے اور سننے کا مفہوم پایا جاتاہے لیکن زیر نظر مقالے کے مصنف جناب محسن اراکی کے نزدیک ”گفت و گو“ میں یہ جامع مفہوم نہیں پایا جاتا۔ اس مقالے کا مطالعہ یہ امر ذہن میں رکھتے ہوئے کیا جانا چاہیے۔ علاوہ ازیں قارئین کے علم میں ہوگا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے موجودہ صدر جناب ڈاکٹر سید محمد خاتمی نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے ایک اجلاس میں اپنے خطاب کے دوران سرزمین مغرب میں پیش کیے جانے والے تہذیبوں

  • مشاہدات: 2408

کبوتر قدس حصہ اول

 حسین عطائی رویانی

مترجم: ثاقب اکبر

شیخ صنعان کی حکایت کی بازگشت عارف فلسفی حاجی ملا ہادی سبزواری کی غزلِ ملمع میں شیخ فریدالدین عطار نیشاپوری کی شاعری میں اور فارسی کی دیگر عرفانی شاعری میں ”منطق الطیر“ کی حیثیت بہت بلند اورنہایت اہم ہے نیز ”رسالة الطیر“ نام کے دیگر رسائل کے مقابلے میں یہ بہت سی خصوصیات اورامتیازات کا حامل ہے۔ ”منطق الطیر“ اگرچہ تعلیم عرفان کی شاعری میں سے ہے۔ تاہم شعر کے اصلی عنصر اورخمیر یعنی خیال اورایماءسے خالی نہیں۔اس کا مضمون ایک کلی و ہم آہنگ نظام کے تحت عرفانی سیروسلوک کے رازواشارات کا مربوط مجموعہ ہے۔

  • مشاہدات: 2968

فطرت (باب۷)

فطرت ( استاد مرتضی مطهری )

مترجم: ثاقب اکبر

مفکرِ اسلام استاد شہید مطہری نے ”فطرت“ کے زیرعنوان دس مجالس سے خصوصی طورپر خطاب فرمایا۔ یہ فکرانگیزمجالس تہران کے مدرسہ نیکان کے اساتذہ کی طرف سے برپاکی گئی تھیں اوراساتذہ کرام ہی ان میں شریک ہوتے تھے۔ یہ مجالس تقریباً ۵۸۹۱ میں منعقد ہوئی تھیں۔”فطرت“ ایک ایسا مسئلہ ہے جسے خود استاد شہید نے معارف اسلامی کے لئے ”ام المسائل“ قرار دیا ہے۔

  • مشاہدات: 3604

حضرتِ عشق

 این میری شمل

ترجمہ: ثاقب اکبر

اس عظیم عاشق خاتون نے خندہ پیشانی سے قبول کرلیا کہ ہم ساعت بھر اُن سے مولانا کے بارے میں گفتگو کریں، اگرچہ وہ تھکی ہوئی تھیں اور ابھی ابھی سفر کرکے پہنچی تھیں۔مولانائے بلخ کے بارے میں بات کرتے ہوئے وہ وجد میں آجاتیں۔ مثنوی یا دیوان کبیر کا ہر شعر پڑھتے ہوئے وہ گویا ایک سال جوان تر ہوجاتیں، آسمانِ عشق میں سے کسی عرفانی سماع میں کھو جاتیں۔ مولانا کے بارے میں بات چیت فارسی، عثمانی ترکی اور جرمنی زبان میں جاری رہی لیکن یہ زبان عشق تھی جوکہی اور سنی جارہی تھی اور جو ہمدلی پیدا کررہی تھی

  • مشاہدات: 2911

فطرت

استاد شہید مرتضیٰ مطہری

ترجمہ: ثاقب اکبر

مفکرِ اسلام استاد شہید مطہری نے ”فطرت“ کے زیرعنوان دس مجالس سے خصوصی طورپر خطاب فرمایا۔ یہ فکرانگیزمجالس تہران کے مدرسہ نیکان کے اساتذہ کی طرف سے برپاکی گئی تھیں اوراساتذہ کرام ہی ان میں شریک ہوتے تھے۔ یہ مجالس تقریباً 1985 میں منعقد ہوئی تھیں۔

  • مشاہدات: 2075

نظریہ فطرت کی کلامی حیثیت

مولف :حمید نگارش

ترجمہ ثاقب اکبر

دینی مفکرین میں سے معاصر فرزانہ متکلم استاد مطہری وہ نمایاں ترین شخصیت تھے جنہوں نے علمِ کلام کے حقیقی مقام کو مشخص کرتے ہوئے اسلام کو ایسا جامع اور ہمہ گیر نظام ثابت کردکھایا جو انسان کی تمام ضروریات کو پورا کرسکتا ہے اور اس کے لیے دونوں جہانوں کی سعادت کا حامل ہے۔ استاد مطہری کا تمام تر ہم و غم دین کا دفاع تھا؛ لہٰذا انہوں نے ایک عظیم نگہبان کی حیثیت سے گہری وسعتِ نظر کے ساتھ اسلامی تعلیمات کی تشریح کرتے ہوئے اغیار کے شبہات اور اتہامات کا سامنا کیا اور اسلامی تعلیمات کے دفاع کو اپنا دستور کار بنالیا۔ حقوقِ نسواں کی وضاحت، مسئلہ حجاب، فلسفہ اخلاق، دین کا دوام، دین کی ضرورت، سائنس اور دین وغیرہ جیسے موضوعات اپنے تنوع کے باوصف معرفت کی وسعت اور روش کے امتیاز سے تعلق کے حوالے سے استاد کی نظر میں کلامی موضوعات قرار پائے۔

  • مشاہدات: 2464