سماجی

انسان اور انسانیت سے غافل روزہ داری


تحریر: ثاقب اکبر



یہ کیا ہوا؟ اتنا غصہ! لوگ روزہ رکھ کر غصیلے کیوں ہو جاتے ہیں، ایک دوسرے کو دھکا دے کر کیوں گزر جانا چاہتے ہیں؟ جوں جوں افطاری کا وقت قریب آتا ہے یوں لگتا ہے کہ بہت سے روزہ داروں کا غصہ بڑھتا چلا جا رہا ہے۔ یہ روزے کی کیا تاثیر ہے؟

  • مشاہدات: 568

ایک نظام تعلیم، ایک قوم

تحریر: ثاقب اکبر

ہفتے کی رات پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اسلام آباد دھرنے کے مقام پر خطاب کرتے ہوئے پاکستان کے نظام تعلیم کے لئے اپنے نقطہ نظر کو ایک مرتبہ پھر واضح انداز سے بیان کیا۔ وہ کہ رہے تھے: ’’ہم اپنے ملک کے نظام تعلیم پر کام کریں گے اور یہاں ایک طرح کا تعلیمی نظام لے کر آئیں گے۔ انگریزی میڈیم جہاں سے ممی ڈیڈی پیدا ہوتے ہیں، اردو میڈیم اور دینی طریقہ تعلیم سب کو ختم کرکے ہم ایک ایسا تعلیمی نصاب دیں گے جس میں انگریزی بھی پڑھائی جائے گی، اپنی زبان کی تعلیم بھی ہوگی اور دین بھی پڑھایا جائے گا۔ موجودہ تعلیمی نظام تین طرح کے ذہن اور اقوام پیدا کر رہا ہے۔ ہم ایک نظام تعلیم کے ذریعے پاکستانیوں کو ایک قوم بنائیں گے۔‘‘

  • مشاہدات: 654

رمضان المبارک میں مہنگائی

تحریر: ثاقب اکبر

اگر پاکستان کی آبادی 20 کروڑ فرض کر لی جائے اور اس آبادی میں سے روزے داروں کی تعداد 10 کروڑ فرض کرلی جائے تو کہا جاسکتا ہے کہ 10 کروڑ انسان جو پہلے 3 وقت کھانا کھاتے تھے، وہ رمضان المبارک میں روزے کی وجہ سے ان دنوں فقط 2 وقت کا کھانا کھاتے ہیں۔ اس طرح 10 کروڑ آدمی ایک وقت کا کھانا نہیں کھاتے۔ اگرچہ یہ عامیانہ جمع تفریق ہے لیکن بات سمجھانے کے لیے اسے فرض کیا گیا ہے۔ اسے سامنے رکھا جائے تو کیا رمضان المبارک میں کھانے پینے کی چیزوں کی قیمتیں مارکیٹ اصولوں کے مطابق کم ہونی چاہئیں یا زیادہ؟ ایک سادہ سا قاری بھی کہے گا کہ اس طرح تو قیمتیں کم ہوجانی چاہئیں پھر کس طرح سے 50 فیصد سے لے کر 100 فیصد تک قیمتیں بڑھ گئی ہیں۔ آئیے اس سوال کا جائزہ لیتے ہیں۔

  • مشاہدات: 1173

اس موت پر انسانیت کو ماتم کرنا چاہیئے

ہم کیسے مسلمان ہیں کہ ہمارے سامنے عدل اجتماعی پامال ہو رہا ہے، ملت کی بچیاں اپنی عزت بچانے کے لیے آگ میں جل مرتی ہیں۔ غریب غربت کے سبب اپنی اولاد کا گلا گھونٹ دیتا ہے۔ صحراؤں کے باسی بھوک اور پانی کی قلت سے تڑپ تڑپ کر مرتے ہیں، عوام نظام سے مایوس ہیں، حکمران عیش و عشرت کی زندگیاں گزار رہے ہیں، طاقت ور کے لیے کوئی قانون نہیں، کمزور کی انصاف تک رسائی نہیں اور ہم چلے ہیں شریعت نافذ کرنے۔

  • مشاہدات: 679

شریعت اور آئین

تحریر: ثاقب اکبر

ان دنوں پاکستان میں شریعت اور آئین کے حوالے سے نئی بحثیں جاری ہیں جس محفل میں جائیں یہی موضوع اور جس موضوع پر بات شروع ہو آخر کار یہیں پہنچ جاتی ہے۔ ہمارے لکھاری بھی ان دنوں اسی موضوع پر مشق سخن کررہے ہیں۔ ایک دینی طالب علم کی حیثیت سے ہم نے بھی مناسب سمجھا کہ اس حوالے سے چند معروضات اپنے قارئین کی خدمت میں پیش کریں۔

  • مشاہدات: 1117